آدمی

اردو_لغت سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

اینڈرائیڈ اپلیکیشن اردو انسئیکلوپیڈیا کی اینڈرائیڈ اپلیکشن کا اجراء کر دیا گیا ہے۔ ڈاؤنلوڈ کرنے کے لیے ابھی کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia on Google Android

اردو
اردو نستعلیق رسم الخط میں
برصغیر پاک و ہند کے اکثر علاقوں میں بولی اور سمجھی جانے والی زبان جس کے لغات میں پراکرت نیز غیر پراکرت، دیسی لفظوں کے ساتھ ساتھ عربی فارسی ترکی اور کچھ یورپی زبانوں کے الفاظ بھی شامل ہیں اور جس کی قواعد میں عہد بہ عہد تصرفات اور مقامی اختلافات کے باوجود آریائی اثر غالب ہے۔ (ابتداءً ہندوی یا ہندی کے نام سے متعارف رہی۔

آدْمی {آد + می} (عبرانی)

ادمہ، آدَم، آدْمی

عبرانی زبان کے اصلی لفظ ادمہ سے ماخوذ اسم آدم کے ساتھ فارسی قاعدہ کے مطابق ی بطور لاحقۂ نسبت لگانے سے آدمی بنا اور اردو میں بطور اسم آدمی مستعمل ہوا۔ اردو میں سب سے پہلے 1635ء میں "سب رس" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم نکرہ (مذکر)

جمع ندائی: آدْمِیو {آد + مِیو (واؤ مجہول)}

جمع غیر ندائی: آدْمِیوں {آد + مِیوں (واؤ مجہول)}

فہرست

[ترمیم] معانی

1. قوت گویائی رکھنے والا حیوان، انسان، بشر، ابن آدم (جو ایک نظریے کے مطابق نوع حیوان سے ارتقا پا کر وجود میں آیا اور اعلٰی ذہنی ساخت رکھتا ہے)۔

"ابا جان اماں جان سے کہہ رہے تھے کہ رابعہ بصری ایک دن غور کرنے لگیں ..... حساب لگاتے ہی ایک چیخ ماری اور گر پڑیں وہ بھی آدمی تھیں اور میں بھی آدمی ہوں۔"، [1]

2.وہ شخص جو نسلاً انسان ہو مگر اعلٰی اخلاق انسانی سے متصف نہ ہو۔

؎ بسکہ دشوار ہے ہر کام کا آسان ہونا

آدمی کو بھی میسر نہیں انساں ہونا [2]

عمدہ اخلاق و صفات سے متصف شخص، مہذب شائستہ اور صاحب فہم انسان۔

؎ کب اس عمر میں آدمی شیخ ہو گا

کتابیں رکھیں ساتھ گو ایک خربار [3]

3. نوکر، چاکر، خادم۔

"آدمیوں کے لیے بھگارے بیگنوں کا پتیلا علٰحدہ چڑھا ہوا تھا۔" [4]

قاصد، پیامبر۔

؎ موت کے آنے سے ہم فرقت زدہ یوں خوش ہوئے

جیسے ان کا آدمی آیا بلانے کے لیے [5]

معتمد علیہ، وہ رفیق جس پر بھروسا ہو، بھروسے کا شخص۔

جس وقت بھی آپ کو کوئی کام ہو یہ چوڑی آگ پر دکھا دیجیے گا، فوراً میرے آدمی آپ کی مدد کو پہنچ جائیں گے۔" [6]

4. خاوند، شوہر، آشنا۔

"بیٹا بھی تھا، آدمی بھی تھا، اب کوئی نہ رہا۔"، [7]

5. لوگ، خلقت، عوام۔

"تمہارے گھر کے آدمی کہاں گئے ہیں۔"، [8]

6. بالغ، جوان

"بچہ کیوں اچھا خاصا آدمی تھا۔"، [9]

[ترمیم] انگریزی ترجمہ

Good breeding; good manners; politeness; elegance of manner , address or speech; etiquette

[ترمیم] مترادفات

اِنْسان، جَنا، بَشَر، آدَم، مَرْد، اَشْرَفُ الْمَخْلُوقات، مَرْدُم، اِبْنِ آدَم، شَخْص،

متضادات

جِن، فَرِشْتہ،

[ترمیم] مرکبات

آدَمی پَن، آدْمی ذات، آدْمی کا جَنْگَل، آدْمی پَن

[ترمیم] روزمرہ جات

آدمی بنانا 
انسانی شکل دینا، آدمی کی جون میں لانا۔

؎ دن بھر تو وہ فاختہ پڑھاتی شب کو اسے آدمی بناتی، [10]

(کاغذ وغیرہ سے) انسانی پیکر بنانا۔

"کل پتنگ باز نے ایک ناگن بنائی تھی آج ایک آدمی بنایا ہے۔"، [11]

انسانی اخلاق سکھانا، مہذب اور شائستہ بنانا۔

"حیوان کو آدمی بنانا میری قدرت سے باہر ہے۔"، [12]

آدمی کی حالت ہئیت درست کرنا، آدمی کا حلیہ ٹھیک کرنا۔

"نہلا دھلا کر کپڑے پہنائے، نئے سر سے آدمی بنایا۔"، [13]

آدمی بننا 
انسان کی شکل و صورت اختیار کرنا۔

؎ دیو آدمی بن کے بن میں آئے آتے جاتے کو گھیر لائے، [14]

اپنے میں انسانی صفات و اخلاق پیدا کرنا، شائستہ اور مہذب ہونا۔

"یہ میں نہیں چاہتا کہ وہ آدمی بنے۔"، [15]

مال و دولت اور ثروت میں ترقی کرنا۔

"اگر دو چار سال کام چل گیا تو آدمی بن جاءوں گا۔"، [16]

وحشت ترک کرنا، بدحواس نہ ہونا (بیشتر امر حاضر کی صورت میں مستعمل)۔

"لپٹے کیوں جاتے ہو نچلے بیٹھو، آدمی بنو۔"، [17]

آدمی پر آدمی گرنا۔ 

بہت بھیڑ ہونا، ازدحام ہونا، ہجوم ہونا۔

"خلقت کی یہ کثرت تھی کہ آدمی پر آدمی گر رہا تھا۔"، [18]

آدمی کا جامہ رکھنا 

انسانی شکل و صورت میں ہونا، انسان کی جون میں ہونا،انسان ہونا۔

"ہم لوگ بھی آدمی کا جامہ رکھتے ہیں، ہم کو بھی کوئی وقت آرام کرنے کو چاہیے۔"، [19]

آدمی کرنا 

؎ ہو کے وحشی میں رہا یار کی آنکھوں میں مگر آدمی کر نہ سکی صحبت مردم مجھ کو، [20]

آدمی کی صورت نکل آنا 

دبلا پن جاتا رہنا۔

"بدن پر صرف ہڈی چمڑا ہے، چار دن پیٹ بھر کھانا کھائیں گی یہی آدمی کی صورت نکل آئیں گی۔"، [21]

آدمی کے جامے میں آنا 
آدمیت اختیار کرنا، غصہ فرو کرنا، حواس درست کرنا۔

"اب آدمی کے جامے میں آئیے۔"، [22]

انسان کی شکل و صورت اختیار کرنا، انسان کی جون میں آنا۔

؎ قالب ترا انقلاب پائے جامے میں تو آدمی کے آئے، [23]

آدمی کے لباس میں آنا 

؎ آدمی کے لباس میں آءو ہوش پکڑ حواس میں آءو، [24]

آدمی لگانا 

کسی کام کی دیکھ بھال یا کسی معاملے کی کھوج کے لیے اپنے معتبر آدمی متعین کرنا،۔ اپنے معتمد لوگوں کے ذریعے جستجو کرانا۔

؎ میں نے کئی آدمی لگائے یہ حکم ہے ہر سڑک پہ جائے، [25]

[ترمیم] فقرات

آدمی اپنے مطلب کے لیے پہاڑ کے کنکر ڈھوتا ہے 

انسان اپنی غرض کے لیے ہر قسم کی تکلیفیں برداشت کرتا ہے۔ (نوراللغات، 81:1)

آدمی اپنے مطلب میں اندھا ہوتا ہے 

آدمی کو اپنی غرض حاصل کرنے میں برے بھلے کی تمیز نہیں رہتی۔ (نوراللغات، 81:1)

آدمی اَن (-اناج) کا کیڑا ہے۔ 

انسان بغیر غذا کھائے زندہ نہیں رہ سکتا، انسانی زندگی کا دارومدار غذا پر ہے۔

"تمھیں ہمارے سر کی قسم، دو نوالے تو اور کھاءو، آدمی ان کا کیڑا ہے، دن بھر ٹخرٹخر پھرتے ہو۔"، [26]

آدمی انتر کوئی ہیرا کوئی پتھر / کنکر 

سب انسان ایک جیسے نہیں کوئی اچھا ہے تو کوئی برا، برے بھلے سبھی قسم کے انسان ہیں۔

"آدمی آدمی انتر کوئی ہیرا کوئی پتھر، آدمیوں میں بھی شرف اسی کو ہے جو علم نافع کا جامع ہے۔"، [27]

آدمی پانی کا بلبلا ہے۔ 

زندگی ناپائدار ہے۔ (انشائے ہادی النسا، 221)

آدمی پیٹ کا کتا ہے۔ 

رزق کی جستجو میں آدمی جگہ جگہ دوڑتا پھرتا ہے اور ہر اہل نااہل کی اطاعت کرتا ہے، کھانا دے کر آدمی سے جو چاہے کام کرا لو۔

؎ جگ برا کیوں ہے جبکہ دنیا میں آدمی خود ہے پیٹ کا کتا، [28]

آدمی جانے بسے سو جانے کسے 

آدمی کی اچھائی برائی اس کے امتحان سے معلوم ہوتی ہے جس طرح سونے کا کھرا کھوٹا ہونا کسوٹی پر کسے جانے سے معلوم ہو جاتا ہے۔

"بیٹا آدمی جانے بسے سونا جانے کسے مجھے بہو کی طبیعت سے معلوم ہو گیا کہ نہ یہ خود قرار سے بیٹھیں گی نہ تمھیں زندگی بھر چین سے بیٹھنے دیں گی۔"، [29]

آدمی کا شیطان آدمی ہے۔ 

انسان کو انسان بہکاتا ہے، انسان دوسرے کے بار بار بہکانے اور پھسلانے سے متاثر ہوئے بغیر نہیں رہتا۔

غرض آدمی آدمی کا شیطان آدمی ہے، ہر دم کے کہنے سننے سے اپنا بھی مزاج بہک گیا۔، [30]

آدمی کی دو آنکھیں ایک شرمائے دوسری فرمائے 

تائید اور اظہار رضامندی کے طریقے مختلف ہوتے ہیں۔

"لڑکی دلھن بننے سے خوش، لڑکا دولھا پکارے جانے سے راضی، آدمی کی دو آنکھیں ایک شرمائے دوسری فرمائے۔"، [31]

آدمی نے کچا دودھ پیا ہے 

آدمی سہو سے خالی نہیں، آدمی کی طبیعت میں خامی ہے (جب کسی شخص سے اس کی شان کے خلاف کوئی بات ہو تو اس کی معذرت میں مستعمل)۔

؎ نہیں گھٹی میں اس کی پختہ کاری پیا ہے آدمی نے دودھ کچا، [32]

[ترمیم] حوالہ جات

  1. ( 1910ء، گردابِ حیات، 64 )
  2. ( 1869ء، غالب، دیوان، 150 )
  3. ( 1810ء، میر، کلیات، 182 )
  4. ( 1947ء، بھولے سفر کو چلے (سالنامہ ساقی جنوری، 65) )
  5. ( 1928ء، مرقع لیلٰی مجنوں، 85 )
  6. ( 1963ء، ساڑھے تین یار، 69 )
  7. ( 1932ء، میدان عمل، 397 )
  8. ( 1895ء، فرہنگ آصفیہ، 132:1 )
  9. ( 1961ء، بابائے اردو، لغت کبیر، 191:1 )
  10. ( 1838ء، گلزار نسیم، 46 )
  11. ( 1891ء، امیراللغات، 77:1 )
  12. ( 1935ء، دودھ کی قیمت، 91 )
  13. ( 1802 )
  14. ( 1838ء، گلزار نسیم، 14 )
  15. ( 1960ء، گلکدہ، رئیس احمد جعفری، 160 )
  16. ( 1935ء، دودھ کی قیمت، 148 )
  17. ( 1924ء، نوراللغات، 82:1 )
  18. ( 1930ء، حیات صالحہ، 22 )
  19. ( 1892ء، خدائی فوجدار، 162:2 )
  20. ( 1873ء، کلیات منیر، 335:3 )
  21. ( 1924ء، نوراللغات، 83:1 )
  22. ( 1924ء، نوراللغات، 83:1 )
  23. ( 1838ء، گلزار نسیم، 39 )
  24. ( 1871ء، شوق، نواب مرزا (امیراللغات، 78:1) )
  25. ( 1936ء، جگ بیتی، 42 )
  26. ( 1954ء، پیر نابالغ، 77 )
  27. ( 1906ء، الحقوق و الفرائض، 143:3 )
  28. ( 1940ء، منظوم کہاوتیں، احسن مارہروی، 43 )
  29. ( 1900ء، خورشید بہو، 21 )
  30. ( 1802ء، باغ و بہار، 21 )
  31. ( 1891ء، ایامٰی، 27 )
  32. ( 1940ء، منظوم کہاوتیں، احسن مارہروی، 43 )

[ترمیم] مزید دیکھیں

عرض ناشر
لغت کو ممکنہ غلطیوں سے پاک کرنے کی پوری کوشش کی گئی ہے پھر بھی انسان خطا کا پتلا ہے لغت کو مزید بہتر بنانے کے لئے یا لغت کے استعمال میں کسی بھی قسم کی دشواری کی صورت میں admin@urduencyclopedia.org سے رابطہ کریں۔
ذاتی اوزار
متغیرات
ایکشنز
رہنمائی
اوزاردان
دیگر شعبہ جات
Besucherzahler brides of ukraine
website counter