مزا

اردو_لغت سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

اینڈرائیڈ اپلیکیشن اردو انسئیکلوپیڈیا کی اینڈرائیڈ اپلیکشن کا اجراء کر دیا گیا ہے۔ ڈاؤنلوڈ کرنے کے لیے ابھی کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia on Google Android

اردو
اردو نستعلیق رسم الخط میں
برصغیر پاک و ہند کے اکثر علاقوں میں بولی اور سمجھی جانے والی زبان جس کے لغات میں پراکرت نیز غیر پراکرت، دیسی لفظوں کے ساتھ ساتھ عربی فارسی ترکی اور کچھ یورپی زبانوں کے الفاظ بھی شامل ہیں اور جس کی قواعد میں عہد بہ عہد تصرفات اور مقامی اختلافات کے باوجود آریائی اثر غالب ہے۔ (ابتداءً ہندوی یا ہندی کے نام سے متعارف رہی۔


مَزا {مَزا} (فارسی)

فارسی زبان سے ماخوذ اسم ہے۔ اردو میں بطور اسم ہی استعمال ہوتا ہے اور تحریراً 1672ء کو "دیوان عبداللہ قطب شاہ" میں مستعمل ملتا ہے۔

متغیّرات


مَزَہ {مَزَہ}

اسم کیفیت (مذکر - واحد)

واحد غیر ندائی: مَزے {مَزے}

جمع: مَزے {مَزے}

جمع غیر ندائی: مَزوں {مَزوں (و مجہول)}

[ترمیم] معانی

1. لذت، کیفیت جو کسی چیز کے چکھنے سے محسوس ہو؛ (مجازًا) لطف۔

؎ سیر چمن کا لطف ہے صحبت خاص کا مزا

تازم مشام جاں بھی ہو، دل بھی ہولاتِ آشنا، [1]

2. عیش و نشاط، رنگ رس، حظِ نفسانی۔

؎ شاب آغاز تھا فضل خدا سے

طبیعت میں مزا تھا ابتدا سے، [2]

3. { مجازا } سیر، تماشا۔

؎ مزا برسات کا چاہو تو بیٹھو میری آنکھوں میں

سفیدی ہے سیاہی ہے شفق ہے ابر و باراں ہے، [3]

4. پرلطف واقعہ۔

؎ دیکھ لے گا یہ مزا حشر میں جو جائے گا

آپ جو حکم کریں گے وہی ہو جائے گا، [4]

[ترمیم] انگریزی ترجمہ

taste, savour, smack, relish; delight, pleasure, enjoyment; anything agreeable to the palate or to the mind

[ترمیم] حوالہ جات

  1. ( 1922ء، مطلع انوار، 45 )
  2. ( 1861ء، الف لیلہ نومنظوم، شایاں، 399:2 )
  3. ( نامعلوم (فرہنگ آصفیہ) )
  4. ( 1884ء، آفتاب داغ، 30 )
عرض ناشر
لغت کو ممکنہ غلطیوں سے پاک کرنے کی پوری کوشش کی گئی ہے پھر بھی انسان خطا کا پتلا ہے لغت کو مزید بہتر بنانے کے لئے یا لغت کے استعمال میں کسی بھی قسم کی دشواری کی صورت میں admin@urduencyclopedia.org سے رابطہ کریں۔
ذاتی اوزار
متغیرات
ایکشنز
رہنمائی
اوزاردان
دیگر شعبہ جات
Besucherzahler brides of ukraine
website counter