منہ

اردو_لغت سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

اینڈرائیڈ اپلیکیشن اردو انسئیکلوپیڈیا کی اینڈرائیڈ اپلیکشن کا اجراء کر دیا گیا ہے۔ ڈاؤنلوڈ کرنے کے لیے ابھی کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia on Google Android

اردو
اردو نستعلیق رسم الخط میں
برصغیر پاک و ہند کے اکثر علاقوں میں بولی اور سمجھی جانے والی زبان جس کے لغات میں پراکرت نیز غیر پراکرت، دیسی لفظوں کے ساتھ ساتھ عربی فارسی ترکی اور کچھ یورپی زبانوں کے الفاظ بھی شامل ہیں اور جس کی قواعد میں عہد بہ عہد تصرفات اور مقامی اختلافات کے باوجود آریائی اثر غالب ہے۔ (ابتداءً ہندوی یا ہندی کے نام سے متعارف رہی۔


مُنْہ {مُنْہ (نون عنہ)} (ہندی)

ہندی زبان سے ماخوذ اسم ہے۔ اردو میں عربی رسم الخط کے ساتھ بطور اسم متعلق فعل استعمال ہوتا ہے۔ 1503ء کو "نوسرہار" میں تحریراً مستعمل ملتا ہے۔

متغیّرات


مُنھ {مُنھ (نون غنہ)} مُو {مُو} مُوں {مُوں} مُوہ {مُوہ}

اسم نکرہ (مذکر)

فہرست

[ترمیم] معانی

1. ماتھے سے ٹھوڑی تک دونوں کنپٹیوں کے درمیان کا حصہ (کل یا جزو) چہرہ، صورت۔

؎ رونا کیسا? ڈھانپ کے منہ اب میں آہیں بھرتا ہوں

ڈرتا ہوں کہیں جاگ نہ جائے کوئی مرا ہمسایا، [1]

2. دونوں ہونٹوں کے بیچ کا سوراخ جس سے کھاتے ہیں، دہن، دہانہ، قسم۔

"اس سانپ سے مشابہہ جو اپنی دم کو اپنے منہ میں لیے ایک دائرے کو تشکیل دیتا ہے"۔، [2]

3. زبان، جپھ، ہونٹ، دہن، تالو، حلق۔

"کبھی بہت خوشی میں آتے تو منہ سے بے اختیار گانے کے بول نکل جاتے"۔ [3]

ہونٹوں سے حلق تک پورا خلا، قصر، گہراؤ، گہرائی۔

"بڑھیا نے کھوپرے کو پہلے خود اپنے پوپلے منہ سے چبا چبا کر نرم کیا، پھر مُنہ سے مُنہ ملا کر بچی کے منہ میں ڈالا"۔ [4]

4. وجود، دم، ذات، ہستی، شخصیت۔

؎ جو تھی تمہارے دم سے بات وہ مجھے اب کہاں نصیب

ایک تمہارے منھ سے تمہیں لاکھ تسلیاں نصیب، [5]

5. کسی چیز میں داخل ہونے کا سوراخ یا اس کا ابتدائی حصہ، دہانہ۔

"اگر برتن کا منھ بہ نسبت درمیانی حصے کے زیادہ چوڑا ہو تو وہ ڈھانچے کے اندر سے آسانی سے نکل سکتا ہے"۔، [6]

6. { طب } زخم وغیرہ کا وہ حصہ جہاں سے وہ رستا ہے، پھوڑے یا زخم کا سوراخ۔

؎ جذب سے تارِ رگ جاں نہ بنا لوں تو سہی

منہ مرے زخم پہ گر نشتر فصّاد آیا، [7]

7. کھلے ہوئے ظرف وغیرہ کے اوپر کنارے۔

"نال کے بعد کا حصّہ پوری توپ کی لمبائی سے آدھا تھا اور منہ کے قریب اس کا دہانہ پانچ بالشت تھا"۔ [8]

(بوتل وغیرہ کی) گردن کے اوپر کے کنارے پر کا سوراخ۔

"مکھیاں اور کیڑے.... جب مادہ پھول پر بیٹھتی ہیں تو ان کی ٹانگوں پر چمٹا ہوا زرگل مادہ پھول کی صراحی کے منہ میں داخل ہو جاتا ہے"۔ [9]

لب، ہونٹ، شفت۔

(فرہنگ آصفیہ)

8. ڈاٹ، ڈھگن لگانے کا سوراخ / جگہ۔

؎ نہ توڑے کہیں خود ابل کر شراب

کوئی کھول دے منہ خموں سے شتاب، [10]

9. آہنی ہتھیار کی دھار، باڑھ۔

؎ جوہر میں آبرو میں اصالت میں لاجواب

وہ قد وہ خم وہ منہ کی صفائی وہ آب و تاب، [11]

10. سیدھی طرف کا حصہ، سامنے کا رُخ۔

"اس کے ساتھ ہی گھوڑی بھی جدھر اس کا منہ تھا ادھر ہی سیدھی سرپٹ دوڑی"۔ [12]

نوک، انی۔

؎ لازم ہے تجھے قدر مرے زخم کہن کی

بوسے دیے ہیں اس نے ترے تیر کے مُنہ پر [13]

11. طرف، سمت، جانب، رُخ۔

؎ پڑا ہوں میں کوچہ میں رہنے دے مجھ کو

الٰہی ادھر مونہہ نہ ہووے صبا کا، [14]

12. پاس، لحاظ، ملاحظہ، مروت، طرفداری۔

؎ ساری محفل کی کج رُخی دیکھی

اک فقط تھا ہمیں تمہارا مُنہ، [15]

13. حوصلہ، مقدرت، جرات، ہمت، طاقت، مجال، تاب۔

؎ پورے نہ اترے آپ مگر اپنے قول میں

ہے منہ کہ آپ مجھ کو یہ الزام دے سکیں، [16]

14. قابلیت، ہنر، جوہر، خوبی، وصف، حیثیت، رتبہ، رسائی۔

؎ کھینچے کس من ہسے تری مانی شبیہہ

سر بجیت آگے تیرے بہزاد ہے، [17]

15. قول، قرار، بات، (جیسے تم کس کے منہ پر جاتے ہو)۔

؎ سو بار چلے آؤ چلے آنے میں کیا ہے

تم منہ کی وفا کا کرو کچھ پاس وفا اور، [18]

16. حق و استحقاق جو حسن عمل کی بنا پر پیدا ہو (گاہے طنزاً)۔

"سارے دن نسہ کھائے پڑے رہتے ہیں ان کا منہ ہے کہ دوسروں کی شکایت کریں"۔، [19]

17. توجہ، التفات۔

(نوراللغات، جامع اللغات)

18. لالچ، خواہش طمع (جیسے اس وکیل کا مُنہ بڑا ہے)۔(فرہنگ آصفیہ)

19. جو شش دہن، آبلہ ہائے دہن۔

(فرہنگ آصفیہ، جامع اللغات)

20. دروازہ، در، دوارا۔

(فرہنگ آصفیہ، جامع اللغات)

21. دریچہ، کھڑکی۔

(فرہنگ آصفیہ، جامع اللغات)

22. راہ، راستہ، گزر، نکاس، آمدورفت کی جگہ۔

(فرہنگ آصفیہ، جامع اللغات)

23. موری، موکھا۔

"غذا کی نالی لمبی اور بلدار ہوتی ہے اور اپنے دونوں سروں پر کھلی ہوتی ہے، اگلا سوراخ منہ کا اور پچھلا سوراخ موری کا روزن کہلاتا ہے"۔، [20]

24. عزت، حرمت، قدرومنزلت۔

(فرہنگ آصفیہ، جامع اللغات)

25. بکارت، چہرہ، دوشیزگی، کنوارہ پن۔

(فرہنگ آصفیہ، جامع اللغات)

26. ناصیہ، پیشانی، آغاز، شروع، دیباچہ، عنوان، کسی چیز کا اوّل۔

(ماخوذ فرہنگ آصفیہ)

27. تھوڑا بہت، کچھ، ذرا سا۔

"شوقین ہیں کہ کبھی اس دوکان پر ٹھہرے دو دو منہ نہیں بول لیے کبھی اس دُکان پر کھڑے ہو گئے اور مذاق کرنے لگے"۔، [21]

28. سبب، باعث، وجہ، واسطہ، کارن جیسے تیرے منہ سے سب کا مان اٹھایا۔

(جامع اللغات، مہذب اللغات)

29. منھ بھر، جتنا منھ میں آئے، لقمہ وغیرہ۔

"کالی گھوڑی.... کبھی دو ایک منھ گھاس کھالی اور کھڑی ہے"۔، [22]

[ترمیم] مترادفات

دَہَن، دَہانَہ، مُکھ، لَوَّجُّہ، عِزَّت، آغاز، مُکھ، دَہان، رُو، رُخ، چِہْرَہ، وَجْہ،

[ترمیم] مرکبات

مُنْہ اُٹھا کے، مُنْہ اُجالے، مُنْہ اَکھْری، مُنْہ اَنْدھیرے کا، مُنْہ آئی بات، مُنْہ بَڑا، مُنْہ بَنا بَنا کَر، مُنْہ بَنا کَر، مُنْہ بَنْد، مُنْہ بَنْد اِلائِچی، مُنْہ بَنْد پان، مُنْہ بَنْد کَلی، مُنْہ بَنْدھی کَلی، مُنْہ بولا، مُنْہ بولا بیٹا، مُنْہ بولا بھائی، مُنْہ بولْتا، مُنْہ بولْتی، مُنْہ بولْتی تَصْوِیر، مُنْہ بولْتی مُورَت، مُنْہ بولی، مُنْہ بولی بَہِن، مُنْہ بھَر، مُنْہ بھَر بھَر، مُنْہ بھَر کے، مُنْہ بھَرائی، مُنْہ بھَری، مُنْہ بھَڑاک، مُنْہ پَٹّا، مُنْہ پَر، مُنْہ پَر آئی بات، مُنْہ پَڑی، مُنْہ پَہ، مُنْہ پھَٹ، مُنْہ پھُولا، مُنْہ پھوڑ کَر، مُنْہ تَک، مُنْہ توپا، مُنْہ توڑ جَواب، مُنْہ جَلی، مُنْہ جھُلْسی، مُنْہ جھَونْسا، مُنْہ چَٹَوَّل، مُنْہ چَڑھا، مُنْہ چَڑھی، مُنْہ چَنْگ، مُنْہ چَور، مُنْہ چوری، مُنْہ چھُوائی، مُنْہ دَر مُنْہ، مُنْہ دِکھانے کے قابِل، مُنْہ دِکھائی، مُنْہ دیکھْنے کو، مُنْہ دیکھْے کا، مُنْہ دیکھْے کی، مُنْہ دیکھْے کی یاری، مُنْہ دیکھا، مُنْہ دیکھنے کی پِریت، مُنْہ دیکھی، مُنْہ دیکھی مَحَبْت، مُنْہ دیکھے کی اُلْفَت، مُنْہ دیکھے کی باتیں، مُنْہ دیکھے کی پِیت، مُنْہ دیکھے کی تَعرِیف، مُنْہ دیکھے کی چاہ، مُنْہ زَبانی، مُنْہ زور، مُنْہ زور پَن، مُنْہ زور جَوانی، مُنْہ زوری، مُنْہ سَر لَپیٹے، مُنْہ سَڑی، مُنْہ سے، مُنْہ سے منہ مِلائے، مُنْہ فَق، مُنْہ کا باجا، مُنْہ کا پھُوپَڑ، مُنْہ کا سَچّا، مُنْہ کا سَخْت، مُنْہ کا کَچّا، مُنْہ کا کَڑا، مُنْہ کا کَہْنا، مُنْہ کا مِیٹھا، مُنْہ کا نَرْم، مُنْہ کا نِوالَہ، مُنْہ کو، مُنْہ کھُر، مُنْہ کی، مُنْہ کی آئی بات، مُنْہ کی بات، مُنْہ کی بِیماری، مُنْہ کی پھوڑی، مُنْہ کی ٹِکْیا، مُنْہ کی سَچّی، مُنْہ کی کَچّی، مُنْہ کی کَراری، مُنْہ کی کَڑی، مُنْہ کی کَہَن، مُنْہ کی گالی، مُنْہ کی وَفا، مُنْہ کے بَل، مُنْہ کھول کَر، مُنْہ لَٹْکائے، مُنْہ لَگا، مُنْہ ماتھا، مُنْہ ماری، مُنْہ مانْگا، مُنْہ مانْگی، مُنْہ مانْگی مُراد، مُنْہ مانْگے، مُنْہ مانْگے دام، مُنْہ مَرا پَن، مُنْہ مُلا حَظہ، مُنْہ میں، مُنْہ نال، مُنْہ ہی مُنْہ، مُنْہ ہی مُنْہ میں

[ترمیم] حوالہ جات

  1. ( 1988ء، برگد 137 )
  2. ( 1989ء، تنقید اور جدید تنقید، 19۔ )
  3. ( 1989ء، آب گم، 136 )
  4. ( 1989ء، آب گم، 112 )
  5. ( 1925ء، شوق قدوائی، عالم خیال، 17 )
  6. ( 1916ء، گہوارۂ تمدن، 85 )
  7. ( 1895ء، دیوان راسخ دہلوی، 53 )
  8. ( 1967ء، اردو دائرہ معارف اسلامیہ، 905:3 )
  9. ( 1988ء، جدید فصلیں، 49 )
  10. ( 1932ء، بے نظیر، کلام بے نظیر، 271 )
  11. ( 1874ء، انیس مراثی، 204:1 )
  12. ( 1944ء، رفیق حسین، گوری ہوگوری، 191 )
  13. ( 1824ء، دیوان مصحفی (انتخاب رامپور 84) )
  14. ( 1798ء، دیوان میر سوز، 46 )
  15. ( 1898ء، دیوان مجروح، 151۔ )
  16. ( 1984ء، قہرعشق (ترجمہ)111 )
  17. ( 1838ء نصیر دہلوی، چمنستان سخن، 211 )
  18. ( 1897ء، کلیات راقم دہلوی، 72 )
  19. ( 1922ء، گوشۂ عافیت، 383:1 )
  20. ( 1965ء، معیاری حیوانیات، 48:1 )
  21. ( 1908ء، مخزن، فروری، 45۔ )
  22. ( 1944ء رفیق حسین، گوری ہو گوری، 186 )

[ترمیم] مزید دیکھیں

عرض ناشر
لغت کو ممکنہ غلطیوں سے پاک کرنے کی پوری کوشش کی گئی ہے پھر بھی انسان خطا کا پتلا ہے لغت کو مزید بہتر بنانے کے لئے یا لغت کے استعمال میں کسی بھی قسم کی دشواری کی صورت میں admin@urduencyclopedia.org سے رابطہ کریں۔
ذاتی اوزار
متغیرات
ایکشنز
رہنمائی
اوزاردان
دیگر شعبہ جات
Besucherzahler brides of ukraine
website counter