پابند

اردو_لغت سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

اینڈرائیڈ اپلیکیشن اردو انسئیکلوپیڈیا کی اینڈرائیڈ اپلیکشن کا اجراء کر دیا گیا ہے۔ ڈاؤنلوڈ کرنے کے لیے ابھی کلک کریں۔

Urdu Encyclopedia on Google Android

اردو
اردو نستعلیق رسم الخط میں
برصغیر پاک و ہند کے اکثر علاقوں میں بولی اور سمجھی جانے والی زبان جس کے لغات میں پراکرت نیز غیر پراکرت، دیسی لفظوں کے ساتھ ساتھ عربی فارسی ترکی اور کچھ یورپی زبانوں کے الفاظ بھی شامل ہیں اور جس کی قواعد میں عہد بہ عہد تصرفات اور مقامی اختلافات کے باوجود آریائی اثر غالب ہے۔ (ابتداءً ہندوی یا ہندی کے نام سے متعارف رہی۔


پابَنْد {پا + بَنْد} (فارسی)

فارسی زبان میں اسم پا کے ساتھ فارسی مصدر بستن سے مشتق صیغۂ امر بند بطور لاحقۂ فاعلی لگنے سے پابند مرکب توصیفی بنا۔ اردو زبان میں فارسی سے ماخوذ ہے اور بطور اسم اور گاہے بطور اسم صفت مستعمل ہے۔ 1609ء میں "قطب مشتری" میں مستعمل ملتا ہے۔

متغیّرات


پائے بَنْد {پا + اے + بَنْد}

اسم نکرہ

فہرست

[ترمیم] معانی

1. { بطور مذکر }وہ رسی جس سے گھوڑے کے اگلے یا پچھلے پاؤں باندھے جاتے ہیں، گھوڑے کی پچھاڑی۔

(فرہنگ آنندراج، 853:2)

2. { بطور مؤنث } گھوڑے کے اگلے اور پچھلے پاؤں پر پائی جانے والی بھونری۔

"پابند، یہ بھونری دونوں ہاتھ اور پاؤں پر ہوتی ہے۔"، [1]

صفت ذاتی [2]

[ترمیم] معانی

1. پابستہ، مقید، گرفتار۔

؎ دام گیسو میں نہ کیوں ہو دل مضطر پابند

ہے یہی اس کی سزا اور سزا کونسی ہے، [3]

2. مطیع، فرماں بردار، ماتحت۔

"پابند بنانا چاہا تو وہ شہر چھوڑ کے بھاگ کھڑا ہوا۔" [4]

کسی ایک کا ہو کر رہنے والا، بالعموم طوائف جو کسی ایک آشنا سے متعلق ہو جائے۔

"پھر سنا وہ کسی کی پابند ہے۔" [5]

3. قانوناً یا اخلاقاً کسی بات پر قائم، کسی عمل کو مسلسل جاری رکھنے والا

"کسی شہر میں ایک تاجر مالدار ----- تھا،بڑا پابند وضع" [6]

معمولاً کسی بات پر قائم، عادی۔

"میں صبح کو اٹھ کر حقے کا پابند نہیں۔" [7]

4. کوئی خاص کام بجا لائے پر متعین، کسی کام کی بجا آوری کا ذمہ دار۔

؎ بڑھتے ہیں صفیں توڑ کے عباس خردمند

کیا جنگ کریں مشک بچانے کے ہیں پابند، [8]

[ترمیم] مترادفات

پابستہ، رِشْتَہ بَپا، اَسِیر، قَیدی، مَحْدُود، زِنْدانی، پابَگِل، پا زَنْجِیر، پا بَجَولاں، گِرِفْتار

[ترمیم] حوالہ جات

  1. ( 1872ء، رسالہ سالوتر، 23:2 )
  2. ( مذکر - واحد )
  3. ( 1936ء، شعاع مہر، 138 )
  4. ( 1926ء، شرر، مضامین، 111:3 )
  5. ( 1889ء، سیرکہسار، 10:1 )
  6. ( 1901ء، الف لیلہ، سرشار، 55 )
  7. ( 1924ء، نوراللغات، 10:2 )
  8. ( 1891ء، تعشق، براہین غم، 119 )

[ترمیم] مزید دیکھیں

عرض ناشر
لغت کو ممکنہ غلطیوں سے پاک کرنے کی پوری کوشش کی گئی ہے پھر بھی انسان خطا کا پتلا ہے لغت کو مزید بہتر بنانے کے لئے یا لغت کے استعمال میں کسی بھی قسم کی دشواری کی صورت میں admin@urduencyclopedia.org سے رابطہ کریں۔
ذاتی اوزار
متغیرات
ایکشنز
رہنمائی
اوزاردان
دیگر شعبہ جات
Besucherzahler brides of ukraine
website counter